Piyaar Sufiyana Lyrics

Piyaar Sufiyana by Farhan Saeed Lyrics

Piyaar   Sufiyana  lyrics,  the   melody   of   love   and   romance,   beautifully   sung   by   Farhan   Saeed   featuring   the   stunning   Hania   Aamir.  Enjoy   and   stay   connected   with   us!

Piyaar Sufiyana Farhan Saeed Lyrics

تم تھے یہاں پہ بات زباں پہ
ٹھہری نظر  نے کچھ نا کہا

دل کے اشارے راز وہ سارے
جان گئے ہو تم کس طرح

روح میں آ کے ایسے بسے ہو
قصے بنے داستاں

ہے پیار صوفیانہ
میرا ہے یار صوفیانہ

خوشبو سے تیری بھر سا گیا ہو
کیسی ہوا میں اُڑنے لگا ہوں

جینے کے کتنے در کھولتے ہو
باتوں میری تم بولتے ہو

دل کہ رہا رہے یہ جو نشہ ہے
یوں ہی رہے بس رواں

ہے پیار صوفیانہ
میرا ہے یار صوفیانہ

آنکھوں پہ چل کے خوابوں میں ڈھل کے
اُترے ہو مجھ میں خود سے نکل کے

لمحوں سے چُن لے صدیوں میں بُن لے
دھڑکن ہو تیری دھڑکن سے سُن لے

ہاں باخدا ہو! تم وہ عطا ہو
مشکل ہے جس کا بیاں

ہے پیار صوفیانہ
میرا ہے یار صوفیانہ

Checkout other  beautiful song:

Main Tera Song Azaan Sami Khan Lyrics

‘Piyaar Sufiyana’ | Farhan Saeed | Hania Aamir

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *