PEER BULAVEY Song Lyrics

PEER BULAVEY Song Lyrics – Omer Shahzad & Anoushay Abbasi

“Peer Bulavey”  gives  words  to   a   soulful   connection   between   two   people. Omer   Shahzad  &  Anoushay  Abbasi’s   chemistry   adds   to   the   richness   of   the   tender   tune   of   this   duet.

Peer Bualvey Song Lyrics

کیا کھویا کیا پایا میں نے ایک پل میں
یاراں لگتا ہے ایک صدیاں جی آیا
طوفان جو نہ برسا اس کے آنگن سے
میں تو لگتا ہے پانی پی آیا
یاداں وچ تیرے میں تے سپنے سجاواں
دعا والے ہتھاں نوں میں کی سمجھاواں
یار بولاواں کے پیر مناواں

جد یار ستاوے، مینوں پیر بولاوے
اُس وہیڑے

پیار نصیبوں سے ملتا ضرور ہے
میری بدنصیبی کا اس میں کیا قصور ہے
تیرا انتظار ہے تو ہی میرا یار ہے
جیت تو ہی میری ہار ہے
جد یار ستاوے مینوں پیر بلاوے
اُس ویڑے

خواب میں بھی آتا ہے تو دیکھتا کیوں تو دور ہے
بند آنکھوں کا میری تو ہی تو نور ہے
میری سانسوں میں ہے تو میری دھڑکنوں میں تو
گیت تو ہی میرا ساز تو

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *