noor jahan

Old Song – Mujh Se Pehli si Muhabbat Mere Mehboob Lyrics – Noor Jahan

Honouring   the   Queen   of   Melody
Makika – e – Taaranum   Noor   Jahan
(1925 – 2000)

Noor Jahan – Old Song

Mujh Se Pehli si Muhabbat Mere Mehboob Lyrics – Old Song

مجھ سے پہلی سی محبّت مرے محبوب نہ مانگ

میں نے سمجھا تھا کہ تو ہے تو درخشاں ہے حیات

تیرا غم ہے تو غمِ دہر کا جھگڑا کیا ہے

تیری صورت سے ہے عالم میں بہاروں کو ثبات

تیری آنکھوں کے سوا دنیا میں رکھا کیا ہے

تو جو مل جائے تو تقدیر نگوں ہو جائے

یوں نہ تھا، میں نے فقط چاہا تھا یوں ہو جائے

مجھ سے پہلی سی محبّت مرے محبوب نہ مانگ

اَن گنت صدیوں کے تاریک بہیمانہ طلسم

ریشم و اطلس و کمخواب میں بُنوائے ہوئے

جا بجا بکتے ہوئے کوچہ و بازار میں جسم

خاک میں لتھڑے ہوئے خون میں نہلائے ہوئے

لوٹ جاتی ہے اِدھر کو بھی نظر کیا کیجے

اب بھی دلکش ہے ترا حسن، مگر کیا کیجے

راحتیں اور بھی ہیں وصل کی راحت کے سوا

مجھ سے پہلی سی محبّت مرے محبوب نہ مانگ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *